سعودی عرب: 3 فوجی اہلکاروں کو غداری کے جرم میں سزائے موت

سعودی عرب میں 3 فوجی اہلکاروں کوغداری کے جرم کی پاداش میں سزائے موت دے دی گئی ہے۔

سعودی وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ تینوں فوجی اہلکاروں کے خلاف غداری کے الزامات ثابت ہوئے تھے۔
یہ بھی پرھیں: سعودی عرب مسجد میں اذان دینے پر تنازع، موذن اور نمازی قتل

وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ’عسکری حلف وفاداری سے خیانت کرتے ہوئے فرسٹ سولجر محمد بن احمد بن یحی عکام، فرسٹ سولجر شاہر بن عیسی بن قاسم حقوی اور فرسٹ سولجر حمود بن ابراہیم بن علی الحازمی نے عسکری حیثیت میں ملک سے غداری کا ارتکاب کیا ہے‘۔

سعودی حکام کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ’ملک کے ساتھ غداری کا الزام ثابت ہونے پر مذکورہ افراد کو ان کی عسکری حیثیت کی بنا پر اور شرعی و قانونی تقاضے کی بنیاد پر سزائے موت دے دی گئی ہے‘۔

اعلامیہ میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ ’مذکورہ افراد نے وطن کو نقصان پہنچانے کے لیے دشمن کے ساتھ تعاون کک سنگین جرم کا ارتکاب کیا، انہوں نے عدالت کے سامنے جرم کا اقرار کیا اور شواہد سے بھی الزام ثابت ہوا ہے‘۔