سعودیہ میں مقیم لاکھوں پاکستانیوں کو پی آئی اے نے خوشخبری سُنا دی

سعودی عرب میں 26 لاکھ سے زائد پاکستانی مقیم ہیں، ہر سال سعودی مملکت میں پاکستانی کارکنان کی گنتی میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ اس کے علاوہ حج اور عمرہ کے موقع پر بھی 20 لاکھ سے زائد پاکستانی سعودی عرب آتے ہیں۔ اکثر سعودی ایئرپورٹس پر ہر وقت بے پناہ رش ہوتا ہے، جن میں جدہ، مدینہ اور ریاض کے ایئرپورٹس بھی شامل ہیں۔

تاہم اب پاکستانی مسافروں کے لیے شاندار خبر آ گئی ہے۔القصیم ایئرپورٹ کے بعد اب مزید دو سعودی شہروں کے لیے بھی پاکستان سے عنقریب پروازیں چلیں گی۔ پی آئی کے ترجمان عبداللہ حفیظ نے بتایا ہے کہ پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز نے مزید بین الاقوامی ایئرپورٹس پر پروازیں چلا کر فلائٹ آپریشنز کو وسیع تر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے منافع بخش روٹس کو ترجیح دی جائے گی۔

سعودی عرب میں 25 لاکھ سے زائد پاکستانیوں کی موجودگی کے باعث اب طائف اور ابہا کے لیے بھی انٹرنیشنل پروازیں شروع کی جائیں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ سال سعودی حکومت نے القصیم ایئرپورٹ کے لیے اسلام آباد اور لاہور سے پروازیں چلانے کی اجازت دے دی تھی، تاہم کورونا وبا کے باعث فلائٹ آپریشنز پر عارضی پابندیوں کے باعث فی الحال ان پروازوں کا آغاز نہیں ہو سکا ہے۔

پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز (پی آئی اے) نے سعودی سول ایوی ایشن سے طائف اور ابہا کے لیے بھی پروازوں کی اجازت مانگ لی ہے۔ اجازت ملنے کے بعد عنقریب لاہور اور اسلام آباد سے طائف کے لیے پروازیں چلائی جائیں گی۔

پی آئی اے ابہا کے لیے ہفتہ وار 2 پروازیں لاہور اور اسلام آباد سے آپریٹ کرے گی۔ اس طرح مزید دوسعودی شہروں تک پاکستانی مسافروں کی براہِ راست رسائی ہو جائے گی ۔ اگرطائف کے لیے پروازیں شروع ہو گئیں تو یہ پی آئی اے کاساتواں اسٹیشن ہو گا۔ واضح رہے کہ سعودی حکومت نے کچھ عرصہ قبل پی آئی اے کو القصیم کے لیے بھی ہفتہ وار دو پروازیں چلانے کی اجازت دے دی تھی۔