شمالی کوریا کا دو شارٹ رینج میزائلوں کا تجربہ

سیئول/ واشنگٹن: شمالی کوریا نے امریکی اور جنوبی کوریا کے دباؤ کو مسترد کرتے ہوئے 2 شارٹ رینج کروز میزائلوں کا تجربہ کیا ہے۔

شمالی کوریا نے اپنے مغربی ساحل پر دو شارٹ رینج کروز میزائلوں کا تجربہ کیا ہے۔ نئی امریکی حکومت کے بعد شمالی کوریا کا ہتھیاروں کا یہ پہلا تجربہ تھا جس پر امریکا میں تشویش پائی گئی ہے۔

شمالی کوریا کی جانب سے کیے گئے کروز میزائلوں کے تجربے چھوٹے درجے پتھیاروں کے نظام سے تعلق رکھتے ہیں اس لیے یہ اقوام متحدہ کی پابندیوں کی خلاف ورزی نہیں تھے تاہم امریکا اور جنوبی کوریا نے شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔

امریکا میں نئی حکومت کے دو عہدیداروں نے میزائل تجربوں کو جارحیت سے تعبیر کرتے ہوئے بتایا ’’صدر جوبائیڈن پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ شمالی کوریا سے سابق دور میں کیئے گئے مذاکرات کے باوجود کچھ تبدیل نہیں ہوا ‘‘۔

شمالی کوریا کے حکمران کم جونگ اُن نے حال ہی میں امریکا کو اپنے ملک کا سب سے بڑا دشمن قرار دیتے ہوئے نئی حکومت سے مذاکرات کے تاثر کو مسترد کردیا تھا جس کے بعد جوبائیڈن دور میں پہلی بار میزائل تجربہ کیا۔

واضح رہے کہ جنوبی کوریا میں امریکا کے 28 ہزار سے زیادہ فوجی تعینات ہیں اور دونوں ممالک حلیف کی حیثیت سے شمالی کوریا کی جارحانہ کارروائیوں اور تجربات پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہیں۔