کولوراڈو فائرنگ: صدر بائیڈن نے بڑی پابندی لگانے کا عندیہ دے دیا

واشنگٹن : فائرنگ کے حالیہ واقعات کی روک تھام کےلیے امریکی صدر بائیڈن نے اسلحے کی خرید و فروخت پر ایگزیکٹیو حکم نامہ جاری کرنے کا عندیہ دے دیا۔

امریکا میں فائرنگ کے واقعات دوبارہ رونما ہونا شروع ہوگئے، جس پر صدر جوبائیڈن نے کہا ہے کہ اسلحے کی خرید و فروخت سے متعلق قانون سازی کےلیے تیار ہیں۔

صدر بائیڈن کا کہنا تھا کہ میرے اختیار میں جو کچھ ہوا وہ کروں گا، قوانین میں ترامین کےلیے ہاوس کو جلد بل بجھوائیں گے اور مجرمانہ پس منظر رکھنے والوں پر اسلحہ خریدنے کی پابندی عائد کریں گے۔

امریکی صدر نے کہا کہ حملہ کرنے والوں پر ہتھیاروں کی خرید و فروخت پر بھی پابندی ہوگی، اب ایک منٹ بھی مزید اس حوالے سے انتظار نہیں کرنا چاہتے۔

انہوں نے کہا کہ یہ سیاسی نہیں بلکہ قومی مسئلہ ہے، مستقبل میں زندگیوں کے بچانے کےلیے اقدامات کیے جائیں گے۔صدر جوبائیڈن نے مزید کہا کہ اٹلانٹا اور کولوراڈو واقعات پر وائٹ ہاوس پرچم آج بھی سرنگوں ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز امریک یریاست کولوراڈو کی مقامی مارکیٹ میں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا تھا، جہاں حملہ آور نے اسٹور میں داخل ہوکر اشیائے روز مرہ کی خرید میں مصروف افراد پر اندھا دھند فائرنگ کی تھی، فائرنگ کے نتیجے میں پولیس افسر سمیت دس افراد ہلاک ہوئے تھے۔