امریکی صدر نے چین پر سخت پابندیوں کی منظوری دیدی

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چین کے خلاف مزید سخت پابندیوں کی منظوری کے قانون پر دستخط کر دیئے ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا اور چین کے درمیان تناؤ میں مزید اضافہ ہوگیا ہے اور حریف ممالک ایک دوسرے پر پابندیاں لگانے میں سبقت لے جانے میں مشغول ہیں۔ جس کی تازہ مثال صدر ٹرمپ کی جانب سے چین پر مزید سخت پابندیاں عائد کرنے کی منظوری دینا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہانگ کانگ کی خود مختاری سے متعلق تنازع پر چین کے خلاف پابندیاں سخت کرنے کا فیصلہ کیا اور اس حوالے سے قانونی دستاویز پر دستخط کرکے سخت پابندیوں کی منظوری دے دی ہے۔ اس قانون کی منظوری کے بعد ہانگ کانگ میں جبری کارروائیوں میں ملوث چینی حکام کی امریکا میں املاک منجمد اور امریکا میں داخلے پر پابندی ہوگی۔
صدر ٹرمپ نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ اس پابندی سے چین کو ہانگ کانگ میں عوام کے خلاف جابرانہ اقدامات کے لیے جواب دہ ہونا پڑے گا۔ آزادی اظہار رائے کو ممکن بنانا ہوگا اور ساتھ ساتھ ہانگ کانگ کے ساتھ ترجیحی اقتصادی سلوک کا خاتمہ بھی ممکن ہوسکے گا۔

واضح رہے کہ چین میں ایک قانون کی منظوری کے بعد سے پولیس کو ہانگ کانگ کی خود مختاری کے حامیوں کی جبری گرفتاری اور مظاہرین کو طاقت سے کچلنے کے اختیارات بھی مل گئے ہیں۔ یہ مظاہرے گزشتہ برس سے جاری تھے۔