اماراتی ریاست میں چوروں کی انوکھی واردات

اماراتی ریاست میں ایک برطانوی خاتون کے گھر نامعلوم چوروں نے بہت بڑی واردات کر ڈالی جو کرسمس ڈیکورریشنز اور تحائف لے گئے جن کی مالیت 70 ہزار درہم تھی۔ 35 سالہ برطانوی خاتون بیکی میسن پیشے کے اعتبار سے ایک اسکول ٹیچر ہے اور کئی سالوں سے عجمان کے علاقے الیاسمین میں خریدے گئے گھر میں مقیم ہے۔ وہ ایک روز شام کے وقت شارجہ گئی اور جب اگلے روز واپس آئی تو گھر میں صفایا پھر چکا تھا۔

چور گھر میں کرسمس کے تیار تحفے اور ڈیکوریشنز سمیت پرفیومز، جیولری اور گھڑیاں بھی لے گئے تھے۔ یہاں تک کہ اس کی استعمال شدہ آدھی کریمز بھی لے گئے۔ بیکی کا کہنا تھا کہ میں نے اپنے جاننے والوں کو کرسمس کے تحائف انگلینڈبھجوانے کے لیے پیکنگ کی تھی جن میں پرفیومز، جیولری، گھڑیاں اور دیگر ڈیکوریشنز شامل تھیں ۔چور یہ سب سامان لے اُڑے ، اس کے علاوہ میری ذاتی دستاویزات، بینکنگ دستاویزات، پلے سٹیشن، میک اپ کا سامان، بچوں کے گفٹس، کرسمس ٹری ڈیکوریشنزبھی لے گئے جو کہ میں نے ایک روز پہلے ہی الماری سے باہر نکالے تھے۔

یہ چور ان لوگوں نے ٹی وی لے جانے کی کوشش کی، مگر اسے دیوار سے اُکھاڑنے میں ناکام رہے۔یہ چور اتنا کچھ لے گئے کہ میرے آدھے استعمال ہوئے لوشن، پوشنز اور پرفیومز تک نہیں چھوڑے۔ میں بہت زیادہ صدمے میں ہوں۔حالانکہ میں نے گھر سے نکلتے وقت دروازے اچھی طرح بند کیے تھے، اس کے باوجود یہ واردات ہو گئی۔

اس وارادت کے بعد میں اتنی خوفزدہ ہو گئی کہ اپنی ٹیچنگ کی ملازمت جاری رکھنے کے لیے ایک دوست کے ہاں ٹھہری ہوئی ہوں۔تاہم پولیس کی جانب سے اس معاملے پر تفتیش کہاں تک پہنچی ہے، اس بارے میں بالکل انجان ہوں۔ مجھے اب یہاں رہنے سے ڈر رہنے لگا ہے۔“