اماراتی ریاست نے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے لیے سخت شرط رکھ دی

یو اے ای میں مقیم پاکستانیوں کے لیے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنا خاصا مشکل کام ہوتا ہے، بہت کم پاکستانی ڈرائیونگ ٹیسٹ کی پہلی کوشش میں کامیاب ہو جاتے ہیں، ورنہ دوسری یا تیسری بار ٹیسٹ دینے پر ہی کامیابی نصیب ہو پاتی ہے، جبکہ فیس بھی ضائع ہو جاتی ہے۔ تاہم اب ایک اماراتی ریاست راس الخیمہ میں ڈرائیونگ ٹیسٹ کا مرحلہ مزید مشکل بنا دیا گیا ہے۔

اب ڈرائیونگ ٹیسٹ دینے سے قبل 15 ٹریننگ کلاسز لینا بھی لازمی ہو گا۔ راس الخیمہ پولیس کے ڈائریکٹر جنرل برائے سنٹرل آپریشنز بریگیڈیئر ڈاکٹر محمد سعید الحمیدی نے اس حوالے سے بتایا ہے کہ آئندہ سے جو اُمیدوار ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے خواہش مند ہوں گے ان کے لیے پندرہ Training Lessons لینا لازمی ہوگا۔

اس مرحلے کے بعد ہی ان کا ڈرائیونگ کا فائنل ٹیسٹ لیا جائے گا۔راس الخیمہ پولیس کے اس فیصلے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ڈرائیونگ لائسنس سے قبل ٹریننگ کلاسز کا فیصلہ بہت اچھا ہے۔ اس سے رات کے وقت اندھیرے میں ڈرائیونگ کے دوران پیش آنے والے حادثات کوروکنے میں بھی مدد ملے گی۔ کیونکہ یہاں مقیم ڈرائیورز کی ایک بڑی گنتی رات کے وقت اور بارش کے موسم میں ٹھیک ڈرائیونگ کرنے کی اہلیت نہیں رکھتی۔

کئی ڈرائیورز کو سردیوں کے دوران دُھندمیں ڈرائیونگ کرنے میں بھی مشکلات پیش آتی ہیں، کیونکہ ایسی صورت میں حدِ نگاہ بہت کم ہو جاتی ہے۔ جبکہ بارشوں کے دوران سڑک پر پھسلن بڑھنے سے بھی حادثات کا امکان بڑھا جاتا ہے۔اسی طرح امارات کی سڑکیں اور ٹریفک قوانین دیگر ممالک سے مختلف ہیں۔ غیر ملکیوں کواس طرح کی ٹریننگ دینابہت اچھا فیصلہ ہے۔