سعودی عرب میں ٹیچر کی آن لائن کلاس کے دوران موت ہوگئی

دُنیا بھر میں کورونا کی وبا نے تقریباً ایک سال سے اپنے پنجے گاڑ رکھے ہیں جس کے باعث تعلیمی سرگرمیاں ٹھپ ہو کر رہ گئی ہیں۔ دُنیا بھر میں کئی ماہ تک آن کیمپس حاضری بند رہی اور سٹوڈنٹس کو آن لائن طریقے سے تعلیم دی جا رہی ہے۔ خصوصاً کورونا کی دوسری لہر کے بعدآن لائن تعلیم کا رحجان زیادہ بڑھ گیا ہے۔سعودی عرب میں بھی آن لائن تعلیمی سرگرمیاں جاری ہیں جس سے لاکھوں سٹوڈنٹس مستفید ہو رہے ہیں۔ سعودی عرب میں گزشتہ روز ایک افسوس ناک واقعہ پیش آیا ہے جب ایک ٹیچر آن لائن کلاس کے دوران ہی زندگی کی بازی ہار گیا۔ یہ منظر اس کے سینکڑوں سٹوڈنٹس نے بھی ویڈیو کے ذریعے دیکھا تو خوف و ہراس کا شکار ہو گئے۔ سعودی میڈیا کے مطابق دمام کا ایک ٹیچر آن لائن کلاس کے دوران چل بسا ہے۔

یہ ٹیچر سٹوڈنٹس کو لیکچر دے رہا تھا جب اچانک اس کی طبیعت خراب ہوئی اور وہ اگلے چند لمحوں میں فرش پر گر کر زندگی کی بازی ہار گیا۔ سکول کے ایک ٹیچر نے بتایا کہ اس کے مرحوم ساتھی ٹیچر کی وفات کا منظر درجنوں سٹوڈنٹس نے اپنی آنکھوں سے دیکھا۔ اور انہیں یقین نہیں ہو پا رہا کہ ایک آدمی اچھا بھلا صحت مند ہونے کے باوجود اچانک زندگی سے کیسے محروم ہو سکتا ہے۔بہت سے طلباء اور اساتذہ نے واٹس ایپ پر اطلاع دی تھی کہ ایک عرب ملک سے تعلق رکھنے والا ٹیچر آن لائن کلاس کے دوران چل بسا ہے۔ یہ عرب ٹیچر سکول کی بجائے اپنے محلے کے ایک گھر سے آن لائن تدریس کا عمل انجام دے رہا تھا۔ اپنے استاد کو زمین پر گرتا دیکھ کر طلبہ نے فوراً اپنے اساتذہ کو اطلاع دی۔ جس کے بعد یہ ٹیچر اس کے گھر پہنچ گئے ۔ ہلال احمر کا عملہ بھی فوراً پہنچ گیا مگر ہسپتال منتقل کیے جانے پر ڈاکٹرز نے اس بدنصیب ٹیچر کی موت کی تصدیق کر دی۔