سعودی عرب میں دھوکہ باز گروہ گرفتار لوگوں کو کیسے جال میں پھنساتے تھے؟ ایک کروڑ ریال سے زائد رقم برآمد

ریاض (نیوزڈیسک) سعودی پولیس نے ایک بڑے دھوکہ باز منظم گروہ کو حراست میں لیا ہے، جن کے قبضے سے ایک کروڑ ریال سے زائد رقم برآمد کی گئی ہے، ملزمان میں ملکی اور غیر ملکی افراد شامل ہیں۔ سعودی عرب میں حکام نےعام لوگوں سے دھوکہ دہی سے1.7 کروڑ ریال سے زیادہ ہتھیانے والے پانچ رکنی گروہ کو گرفتار کیا ہے۔

اس حوالے سے ریاض پولیس کے معاون ترجمان نے بتایا ہے کہ پانچ رکنی گروہ جس میں تین سعودی اور اقامہ قانون کی خلاف ورزی کرنے والے دو ملزمان شامی شامل تھے جنہوں نے دھوکہ دہی سے سترہ ملین ریال سے زیادہ ہتھیالیے۔ترجمان نے کہا کہ یہ لوگ خود کو لائ فرم کے کارکن ظاہر کرتے اور بتاتے کہ وہ تداول کمپنیوں کے یہاں پھنسی رقوم نکلوا سکتے ہیں جس کے لیے وہ مختلف لوگوں سے رقوم وصول کر رہے تھے۔پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ ملزمان نے سوشل میڈیا پر اپنی خدمات کی تشہیر کی، ملزمان لوگوں کے بینک اکاؤنٹ کے خفیہ نمبر حاصل کرکے وارداتیں کیا کرتے تھے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پانچ رکنی گروہ نے یہ طریقہ کار اختیار کر کے سعودی شہریوں کے تجارتی اداروں کے اکاؤنٹس کے ذریعے سترہ ملین ریال بیرون ملک موجود شامی شہری کے اکاؤنٹ میں منتقل کردیے تھے۔ریاض پولیس نے ملزمان کو حراست میں لے کر قانونی کارروائی کے لیے پبلک پراسیکیوشن کی تحویل میں دیا ہے۔