رومانیہ: کووڈ 19 سے متاثرہ مریضوں کے ہسپتال میں آتشزدگی، 10 افراد ہلاک

رومانیہ میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے ہسپتال میں آتشزدگی کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک ہوگئے۔غیرملکی خبررساں ادارے ‘اے ایف پی’ کے مطابق رومانیہ میں ایمرجنسی یونٹ کے ترجمان ارینا پوپا نے بتایا کہ پیٹرا نیامٹ نامی شہر کے سرکاری ہسپتال میں کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے قائم کیے جانے والے انتہائی نگہداشت وارڈ میں آگ لگی۔

انہوں نے بتایا کہ آتشزدگی کے نتیجے میں 7 دیگر افراد شدید جھلس چکے ہیں جہاں مجموعی طور پر کووڈ 19 کے مریض وینٹیلی لیٹر پر تھے۔وزیر صحت نیلو تاتارو نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ آگ ‘شارٹ سرکٹ کے باعث لگی تھی’۔مقامی میڈیا نے متاثرہ ہسپتال سے متعلق بتایا کہ وہ طویل عرصے سے ناقص انتظامات کا شکار تھا جہاں حکومت کے مقرر کردہ 8 منیجر گزشتہ سال سے ہسپتال کی نگرانی کر رہے ہیں۔

علاوہ ازیں ہسپتال کے موجودہ منیجر لوسین مائیکو کو صرف 3 ہفتے قبل ہی اس عہدے پر مقرر کیا گیا تھا جبکہ ان سے قبل تعینات منیجر کو مریضوں کے ساتھ خراب سلوک پر عہدے سے برطرف کردیا گیا تھا۔لوسین مائیکو نے بتایا کہ ڈیوٹی پر موجود ایک ڈاکٹر نے مریضوں کو شعلوں سے بچانے کی کوشش کی تاہم وہ خود بھی آگ کی لپیٹ میں آگئے اور ان کی حالت تشویش ناک ہے کیونکہ ان کے جسم کا 80 فیصد حصہ جھلس چکا ہے۔

خیال رہے کہ رومانیہ میں کورونا وائرس کے اب تک 3 لاکھ 53 ہزار کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں۔مقامی میڈیا کے مطابق کورونا وائرس سے 9 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔یاد رہے کہ رواں سال مئی میں اسی طرح کا ایک واقعہ روس کے دارالحکومت ماسکو میں پیش آیا جہاں وائرس سے متاثرہ مریضوں کے ہسپتال میں آتشزدگی سے ایک شخص ہلاک ہوگیا تھا۔ام کورونا وائرس کے دیگر تمام مریضوں کو باحفاظت نکال لیا گیا تھا۔