اماراتی پرچم کی توہین سے باز رہیں، ورنہ ساری زندگی جیل میں سڑنا ہوگا

دُبئی دُنیا بھر کے تمام ممالک کی پہچان کا سب سے بڑا ذریعہ ان کے قومی پرچم بھی ہیں ۔ اسی وجہ سے ہر مُلک اور اس کے باسی اپنے قومی پرچم کو بہت عزت اور احترام دیتے ہیں اور اس کی حُرمت کو ممکن بنانے کے لیے قانون بھی وضع کرتے ہیں۔ تاہم حُب الوطنی سے عاری لوگ کئی بار جان بوجھ کر یا نادانستہ اپنے قوم پرچم کی توہین کرتے ہیں۔
اس حوالے سے قوم پرچم کی توہین پر سزائیں بھی دی جاتی ہیں۔ اگر کسی نے اماراتی پرچم کی توہین کر لی تو سمجھیں اس کی پوری زندگی جیل میں ہی گزرے گی۔ اماراتی حکام کی جانب سے خبردار کیا ہے کہ اگر کوئی شخص اماراتی پرچم کی توہین کرتا ہے یا اس کے ساتھ شرمناک سلوک کرتا ہے تو ایسی صورت میں اسے 25 سال جیل میں گزارنا ہوں گے اور اس پر 5 لاکھ درہم کا بھاری جرمانہ بھی عائد ہو گا۔

اماراتی پبلک پراسکیوشن کی جانب سے اس حوالے سے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر ایک آگاہی سے بھرپور پیغام بھی شیئر کیا گیا ہے۔ ٹویٹر پر ایک پیغام کے ذریعے بتایا گیا ہے کہ جو شخص اماراتی پرچم کی سر عام توہین کرتا ہے، وہ سزا ؤں کا سامان کرنے کو تیار رہے۔ 1971ء کے فیڈرل لاء نمبر 2 کی شق 3 کے تحت اگر کوئی جان بوجھ کر امارات کا پرچم گراتا ہے، اسے خراب کرتا ہے یا اس کی کسی بھی انداز سے توہین کرتا ہے تو اسے کم از کم 10 سال قید کا سامنا کرنا ہوگا جو بعض صورتوں میں 25 سال تک بھی ہو سکتی ہے جبکہ ایسے ملزم پر کم از کم پانچ لاکھ درہم کا جرمانہ بھی عائد ہو گا۔ اسی طرح اگر امارات میں کوئی شخص کسی خلیجی ملک یا کسی بھی ملک کی توہین کرتا ہے تو بھی اسے یہی سزا ہو گی۔