دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے دعودار بھارت میں مسلمانوں کے لیے زمین تنگ،انتہا پسند ہندو رہنماوں کی طرف سے ڈیڈ لائن جاری

نئی دہلی: (حسنات بلوچ) مودی کا بھارت انتہا پسند ہندوتوا پالیسی پر گامزن ہے، انتہا پسند ہندو رہنما اچاریہ مہاراج نے بھارت کو ہندو ریاست قرار دینے کی ڈیڈ لائن دے دی۔

بھارت ہندوتوا کے راستے پر گامزن، انتہا پسند ہندو لیڈر اچاریہ نے مودی سرکار کو دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ دو اکتوبر تک بھارت کو ہندو ریاست ڈکلیئر کیا جائے۔

انتہا پسند ہندو رہنما نے ہندو ریاست کا اعلان نہ کرنے کی صورت میں دو اکتوبر کو سارایو دریا میں جل سمادھی کی دھمکی دے دی، اچاریہ مہاراج نے مطالبہ کیا ہے کہ بھارت میں رہنے والے مسلمانوں اور عیسائیوں کی شہریت بھی چھین لی جائے۔

ہندو لیڈر اچاریہ مہاراج نے اس سے پہلے بھی بھارت کو ہندو ریاست بنانے کا مطالبہ کیا تھا اور پندرہ روز تک بھوک ہڑتال بھی کی تھی تاہم وزیر داخلہ امیت شاہ کی یقین دہانی پر ہڑتال ختم کی تھی۔