ڈیڈلائن ختم، پنجاب میں ویکسین نہیں تو کوئی سروس نہیں

لاہور(حسنات بلوچ) پنجاب میں کرونا سے بچاؤ کی ویکسین کی ڈیڈ لائن کا آج آخری روز ہے، کل سے تمام سیکٹرز میں بغیر ویکسین کسی فرد کو کوئی سہولت نہیں دی جائے گی۔
صوبہ پنجاب میں کل سے نو ویکسین، نو سروسز پر عمل شروع ہو رہا ہے، این سی او سی نے ویکسین لگوانے کے لیے مختلف شعبوں میں تاریخیں مختص کر دی ہیں، مقرر آخری تاریخ کے بعد تمام سیکٹرز میں بغیر ویکسینیشن کسی فرد کو کوئی سہولت نہیں دی جائے گی۔
اسکول انتظامیہ اور اساتذہ کے لیے آج آخری روز ہے، طلبہ کے لیے 31 اکتوبر تک پہلی، جب کہ 30 نومبر تک دوسری ڈوز لگانا لازمی قرار دے دی گئی، جب کہ 18 سال سے زائد عمر شہریوں کے لیے 30 نومبر تک مکمل ویکسین لازمی قرار دی گئی ہے۔
ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ عملے کی مکمل ویکسینیشن کو یقینی بنانے کے لیے اسکول انتظامیہ کو ہدایت جاری کر دی گئی، تعلیمی اداروں کے داخلی راستوں اور نمایاں جگہوں پر عوامی آگاہی کے لیے معلومات آویزاں کرنے کا حکم بھی دیا گیا ہے، ہدایت کے مطابق تعلیمی اداروں کا تمام عملہ ویکسینیٹڈ ہونے کا بیج لگائے گا۔

تعلیمی اداروں کے اسٹاف کے ویکسینیشن سرٹیفیکیٹ چیک کیے جائیں گے، سیکریٹری عمران سکندر بلوچ کا کہنا ہے کہ تعلیمی اداروں کے سربراہ محکمہ صحت کے تعاون سے موبائل ویکسینیشن کیمپس لگوائیں گے، اسمبلی میں بھی ویکسینیشن کی آگاہی سے متعلق پیغامات چلائے جائیں گے۔