جون کا اختتام تک 1 ہزار آکسیجن بیڈز فراہم کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کا جون نے اختتام تک 1 ہزار آکسیجن بیڈز فراہم کرنے کا فیصلہ کرلیا ۔ این سی او سی کے مطابق این سی او سی کی جانب سے ہیلتھ کئیر صلاحیت بڑھانے کے لیے تیز ترین عمل جاری ہے،اس حوالے سے پروکروٹمنٹ کی منظوری آج این سی او سی اجلاس میں دی جائے گی۔ این سی او سی کے مطابق کورونا وائرس سے لڑتے ہیلتھ کئیر ورکرز کے لیے کووڈ19 پیکج بھی فائنل کیا جائے گا ،این سی او سی کی جانب سے این ڈی ایم اے کے زریعے 52 وینٹی لیٹرز

سندھ بھیج دئیے گئے۔اعلامیہ کے مطابق سندھ کو بڑھتی ہوئی ڈیمانڈ کے پیش نظر 50 وینٹی لیٹرز آئندہ 2 سے 3 روز میں بھیجے جائیں گے، این سی او سی کی جانب سے وینٹی لیٹرز اور بیڈز آپریٹ کرنے کے حوالے سے ٹریننگ کا بھی آغاز کر دیا گیا۔ اعلامیہ کے مطابق مردان،صوابی،پشاور کے ہسپتالوں میں بیڈز کی تعداد بڑھانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ۔ اعلامیہ کے مطابق گزشتہ ہفتے پنجاب کو 72 وینٹی لیٹرز فراہم کیے گئے، پنجاب میں کووڈ مریضوں کے لیے اضافی بیڈز کی منصوبہ بندی بھی مکمل کرلی گئی ۔ این سی اوسی کے مطابق بلوچستان حکومت کو 10 وینٹی لیٹرز موصول, ہیومن ریسورس پر کام جاری ہے ،گلگت بلتستان میں ہیلتھ کئیر سسٹم پر دباؤ نہ ہونے کے برابر ہے ،62 وینٹی لیٹرز موجود مزید 10 فراہم کیے جائیں گے۔ اعلامیہ کے مطابق یف ڈبلیو او نے اسلام آباد میں آئسولیشن اسپتال اور انفیکشن ٹریٹمنٹ سینٹر تعمیر کر دیا، ایف ڈبلیو او نے این ڈی ایم اور این آئی ایچ کی جانب سے اسپتال کی تعمیر کی۔این سی او سی کے مطابق 250 بیڈرز پر مشتمل سٹیٹ آف دی آرٹ اسپتال میں کورونا سمیت دیگر وباؤں کا علاج کیا جا سکے گا، اسپتال کا تعمیراتی کام 35 دنوں میں مکمل کیا گیا، اسپتال میں پانچ آئی سی یو وارڈز ، دو جنرل وارڈز کی سہولیات دستیاب ہیں ،اسپتال میں ایمرجنسی، ڈائیگناسٹک، پتھالوجی لائبریری بھی موجود ہیں ۔ اعلامیہ کے مطابق اسپتال میں خصوصی ہیٹنگ، وینٹیلیشن اور ایئر کنڈیشن سسٹم لگایا گیا ہے، اسپتال میں بہترین سیورج سسٹم، سی سی ٹی وی، انٹرکام، ہیلتھ میجمنٹ سسٹم اور لیبارٹی مینجمنٹ سسٹم موجود ہے۔‎