friend daughter sucking sideways big rod.videos porno
desi porn
pornoxxx

جاپان میں‌ نئے مریض کرونا کی کون سی قسم سے متاثر ہو رہے ہیں؟

ٹوکیو: کرونا کی بھارتی قسم نے جاپان میں صورت حال خراب کر دی، ایک سروے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جاپان میں بیش تر نئے متاثرہ لوگ کرونا وائرس کی بھارتی قِسم ڈیلٹا سے متاثر ہوئے ہیں۔

سروے رپورٹ کے مطابق اب جاپان میں انفیکشن کا شکار ہونے والے لوگوں کی بڑی اکثریت کرونا وائرس کی انتہائی وبائی قِسم یعنی ڈیلٹا ویرینٹ سے متاثر ہو رہی ہے، ٹوکیو کے علاقے میں ڈیلٹا کے متاثرین کی شرح 98 فی صد تک پہنچی ہے۔

قومی انسٹیٹیوٹ برائے وبائی امراض نے کرونا وائرس ٹیسٹنگ کرنے والی نجی شعبے کی 7 کمپنیوں کے ڈیٹا کا جائزہ لیا تھا، اس ڈیٹا میں یہ دیکھا گیا کہ مصدقہ کیسز میں L452R والی متغیر وائرسز کی شرح کتنی ہے۔

مذکورہ انسٹیٹیوٹ نے اپنی رپورٹ وزارتِ صحت کے ماہرین کے پینل کو بدھ کے روز پیش کر دی ہے، جس میں بتایا گیا ہے کہ تبدیلی کے حامل وائرسز سے متاثرہ افراد کی شرح جو ٹوکیو میں 98 فی صد ہو چکی ہے، اس میں سب سے بڑا حصہ ڈیلٹا متغیر قسم کا ہے۔

ٹوکیو اور ملحقہ علاقوں کاناگاوا، سائیتاما اور چیبا میں متاثرین کا مجموعی تناسب بھی 98 فی صد تھا۔ مغربی جاپان کے علاقوں اوساکا، کیوتو اور ہیوگو میں L452R منتقلی کے حامل وائرسز کی شرح تیزی سے بڑھ کر 92 فی صد ہو گئی ہے، یہ جولائی کے اوائل تک کم سطح پر تھی۔

قومی انسٹیٹیوٹ نے یہ تخمینہ بھی لگایا ہے کہ ایسے وائرسز سے متاثرہ افراد کی مجموعی شرح اوکیناوا میں 99 فی صد، فُوکُواوکا میں 97 فی صد، آئیچی میں 94 فی صد اور ہوکائیدو میں 85 فی صد ہو چکی ہے۔ مبصرین نے نشان دہی کی ہے کہ متغیر قِسم ڈیلٹا کے پھیلاؤ کے باعث انفیکشن اور اسپتال میں داخل ہونے والوں کی تعداد تیزی سے بڑھی ہے، جس کے سبب ٹوکیو اور دیگر علاقوں میں طبی نظام کی صورت حال تشویش ناک ہو رہی ہے۔

spanish flamenca dancer rides black cock.sex aunty
https://www.motphim.cc/
prmovies teen dildo wet blonde stunner does it on the hood of car.