یوم دفاع: ملی جوش و جذبے کا مظاہرہ، جرات اور بہادری کی داستانیں رقم کرنے کا دن

یوم دفاع: ملی جوش و جذبے کا مظاہرہ، جرات اور بہادری کی داستانیں رقم کرنے کا دن

ملک بھر میں یوم دفاع بھرپور ملی جوش و جذبے سے منایا جا رہا ہے، 6 ستمبر 1965ء جرات اور بہادری کی داستانیں رقم کرنے کا دن ہے۔

آج پاکستان کے طول و عرض میں یوم دفاع بھرپور ملی جوش و جذبے سے منایا جا رہا ہے، بلاشبہ 6 ستمبر 1965ء جرات اور بہادری کی داستانیں رقم کرنے کا دن ہے، جس دن پاکستان کی شیر دل افواج نے کئی گنا بڑے دشمن کو ناکوں چنے چبوا دیے، جس سے بھارت کو ہر محاذ پر منہ کی کھانا پڑی

بہادر افواج نے چونڈا کے محاذ پر دشمن کے ٹینکوں کا قبرستان بنایا، ایم ایم عالم سے لے کر نور خان تک پاکستانی شہپروں نے فضائی جنگ کی نئی تاریخ لکھی، پاک سرزمین کے لاتعداد سپوتوں نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے میں کسی پس و پیش سے کام نہ لیا۔

یوم دفاع کے موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے خصوصی پیغام میں کہا ہے کہ ہماری آزادی اور امن و امان کی فضا شہداء کی بے مثال قربانیوں کی رہین منت ہے، شہداء کی بے مثال قربانیوں کی بنا پر ہی ہمارا پرچم سربلند ہے، پاکستان کا پرچم سر بلند رکھنے کے لیے شہدا نے بے مثال قربانیاں پیش کیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کی جانب سے ٹویٹ کیا گیا کہ قوم ہمارے ہیروز کو سلام پیش کرتی ہے، 6 ستمبر افواج پاکستان کے غیر متزلزل عزم کا عکاس ہے، عظیم قوم کی حمایت کے ساتھ مسلح افواج تمام مشکلات کے باوجود وطنِ عزیز کی حفاظت کے لیے پرعزم ہیں اور دفاع کرتی رہیں گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں