اسلام آباد ہائیکورٹ، شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر سماعت، شہباز گل کو نوٹس جاری

شیباز گل نظر ثانی درخواست

اسلام آباد ہائیکورٹ میں ایڈووکیٹ جنرل کی طرف سے شہباز گل کے مزید جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر سماعت ہوئی، عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل کی درخواست پر شہباز گل کو نوٹس جاری کر دیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں ہونے والی سماعت پر ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد جہانگیر جدون پیش ہوئے، جبکہ مقدمے کے تفتیشی افسر بھی ہائیکورٹ میں حاضر ہوئے۔

سماعت کے دوران ایڈووکیٹ جنرل نے کہا کہ شہباز گل نے ٹی وی چینل پر بیان دیا، ان کے بیان میں قومی سلامتی کے اداروں کو نشانہ بنایا گیا، جس پر حکومت نے سنجیدہ نوٹس لیا اور ان کے خلاف مقدمہ درج کیا۔

ایڈوکیٹ جنرل کے بیان پر عدالت عالیہ نے استفسار کیا کہ آیا آپ یہ کہہ رہے ہیں کہ ملزم کا مزید جسمانی ریمانڈ ضروری ہے ؟
آپ نے مزید جسمانی ریمانڈ میں کیا کرنا ہے ؟ حالانکہ آپ کی ایک نظرثانی اپیل خارج ہوئی، جبکہ دوسرا جسمانی ریمانڈ بھی ختم ہو چکا ہے۔

اس کے علاوہ وکیل رضوان عباسی کی جانب سے مقدمے سے متعلق عدالتی فیصلے پڑھ کر سنائے گئے، جس کے بعد عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل کی درخواست پر شہباز گل کو نوٹس جاری کر دیا، اور مقدمے کی سماعت کل تک ملتوی کر دی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں