اسد قیصر: ممنوعہ فنڈنگ مقدمے کا فیصلہ، اکاؤنٹس صرف سہولت کے لیے کھولے گئے

اسد قیصر: ممنوعہ فنڈنگ مقدمے کا فیصلہ، اکاؤنٹس صرف سہولت کے لیے کھولے گئے

سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ ممنوعہ فنڈنگ کیس کے فیصلے میں جن اکاؤنٹس کا ذکر ہے وہ صرف سہولت کے لیے کھولے گئے۔

پشاور میں میڈیا سے گفتگو کے دوران اسد قیصر نے ممنوعہ فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن کے فیصلے اور ایف آئی اے کے نوٹس پر کہا کہ یہ ایف آئی اے کا اختیار نہیں ہے۔

انھوں نے کہا کہ اکاؤنٹ ہم نے صرف سہولت کے لیے کھولا تھا اور یہ غیرقانونی نہیں ہے، اکاؤنٹ ملازمین کی تنخواہوں اور دفتر کے اخراجات کے لیے کھولا تھا، اکاؤنٹ سے رقم جمع اور نکالنے کے تمام امور بذریعہ چیک ہوئے ہیں، اکاؤنٹ سے 6 سال میں صرف 21 لاکھ روپے کی ٹرانزیکشن ہوئی۔

اسد قیصر کا کہنا تھا کہ پارٹی اس وقت ایک تحریک کے عمل سے گزر رہی ہے، ہم کسی کے غلام نہیں بلکہ آزاد خارجہ پالیسی چاہتے ہیں۔

اس موقع پر سابق اسپیکر قومی اسمبلی نے عمران خان کو مستقبل کا وزیراعظم قرار دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں