روس کورونا ویکسین کی تیاری والا پہلا ملک بننے کیلئے کوشاں

روس نے کورونا سے بچاؤ کی ویکسین تیارکرنے کا دعویٰ کیا ہے اور اس حوالے سے ویکسین کے عام ستعمال کی اجازت کے حصول کی کوشش بھی شروع کردی ہے۔

کورونا ویکسین ماسکو کی گامالیا انسٹی ٹیوٹ نے بنائی ہے جو سب سے پہلے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کو دی جائے گی۔

روس کا کورونا سے بچاؤ کی ویکسین بنانے کا دعویٰ

میڈیا رپورٹس کےمطابق روس کورونا ویکسین بنانے والا پہلا ملک بننے کےلیے کوشاں ہے اور اسی حوالے سے ویکسین کے عام استعمال کی اجازت حاصل کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

روسی حکام کا کہنا ہے کہ 10 یا 12 اگست تک ویکسین کے عام استعمال کی اجازت حاصل کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں روس کی فرسٹ ماسکو اسٹیٹ میڈیکل یونیورسٹی اور مین ملٹری کلینکل برڈنکل اسپتال کی 2 ٹیموں نے کورونا ویکسین کی تیاری کے سلسلے میں پہلا فیز مکمل کیا تھا۔

جس کے بعد اب یہ ویکسین تیاری کے دوسرے مرحلے میں موجود ہے۔

کورونا ویکسین کا تجربہ 18 رضاکاروں پر کیا گیا تھا اور تمام رضا کار مہلک وائرس سے سے محفوظ رہے تھے۔

واضح رہے کہ روس میں کورونا سے اب تک 13 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں جب کہ متاثرہ مریضوں کی تعداد 8 لاکھ سے تجاوز کرچکی ہے۔