معروف گلوکار عالمگیر نے موت کی افواہیں مسترد کردیں

ماضی کے معروف گلوکار عالمگیر نے سوشل میڈیا پر وفات کی افواہوں کو مسترد کرتے ہوئے مداحوں پر زور دیا ہے کہ ان باتوں پر یقین نہ کریں۔

لیجنڈ گلوکار کے اتنقال کی افواہیں جمعے سے گردش کررہی تھیں اور عالمگیر نے ایک فیس بک پوسٹ میں ان کی تردید کی۔

خیال رہے کہ عالمگیر کو پاکستان میں پاپ موسیقی کے بانیوں میں سے ایک مانا جاتا ہے اور اس وقت کے گانے اب بھی بہت زیادہ پسند کیے جاتے ہیں۔

فیس بک پوسٹ میں عالمگیر نے لکھا ‘مجھے بہت زیادہ فون کالز مل رہی ہیں جس کی وجہ میرے حوالے سے خبر ہے، ان خبروں پر یقین نہ کریں، میں بخیریت کراچی میں مقیم ہوں’۔

واضح رہے کہ عالمگیر کا پورا نام عالمگیر حق ہے اور 1970 کی دہائی میں پاکستان ٹیلی ویژن کا حصہ بنے اور 1973 میں البیلا راہی سے انہیں شہرت ملی۔

انہیں 2013 میں حکومت پاکستان کی جانب سے تمغہ حسن کارکردگی کے اعزاز سے بھی نوازا گیا تھا۔

عالمگیر کی فیس بک پوسٹ سے قبل اداکارہ بشریٰ انصاری نے بھی ایک انسٹاگرام پوسٹ میں عالمگیر کے ساتھ فون پر گفتگو کی ویڈیو شیئر کرکے گلوکار کی مووت کی افواہوں کی تردید کی تھی۔

بشریٰ انصاری نے مذاق میں کہا ‘تم سو سال کے ہوگئے ہوں اور اب دنیا سے نہیں جاسکتے’، جس پر عالمگیر نے ہنستے ہوئے کہا ‘میں 200 سال سے پہلے نہیں مروں گا’۔

بشریٰ انصاری نے کہا ‘میں ان افواہوں کو سن کر خوفزدہ ہوگئی تھی، میں سب کو کہنا چاہتی ہوں کہ ایسی افواہوں کو مت پھیلائیں’۔

ان کا کہنا تھا ‘ہم پہلے ہی متعدد بری خبریں سن چکے ہیں اور مزید ایسا کچھ سننا نہیں چاہتے، تم بہت بہادر اور اپنی بیماری سے اتنے عرصے سے لڑ رہے ہو، مجھے تم سے محبت ہے، محفوظ رہو’۔