پاپ کارن کھانے پر بچے کے ساتھ دل دہلا دینے والا حادثہ

اسکاٹ لینڈ میں 2 سال کے بچے نے پاپ کارن کھانے کے دوران اسے گلے میں پھنسا لیا جس کے بعد ڈاکٹر کے پاس جانے کے بعد خوفناک انکشاف ہوا۔2 سال کے جورڈی نے پاپ کارن کھانے کے دوران اسے گلے میں پھنسا لیا جس کے بعد اسے بے تحاشہ کھانسی ہونی شروع ہوئی۔اس کے والدین اسے چیسٹ انفیکشن سمجھ کر ڈاکٹر کے پاس لے گئے جہاں ڈاکٹرز نے اس کا اندرونی اسکین کیا تو پتہ چلا کہ پاپ کارن کے ایک ننھے سے ٹکڑے نے ایک پھیپھڑے کو بے حد نقصان پہنچایا ہے۔

جب ڈاکٹرز نے مزید اسکین کیا تو ان پر خوفناک انکشاف ہوا۔

ڈاکٹرز نے دیکھا کہ 2 سال کا بچہ ایک ہارٹ کنڈیشن کا شکار تھا جس میں اس کی دل کی نالیاں خرابی کا شکار تھیں۔ دل میں خرابی کی وجہ سے اسے آکسیجن بھی مناسب نہیں مل پارہی تھی۔ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ اگر اوپن ہارٹ سرجری نہ کی گئی تو بچہ کسی بھی وقت مر سکتا ہے۔ڈاکٹرز کے مطابق اوپن ہارٹ سرجری فیل ہوجانے، یا اس کی وجہ سے کوئی معذوری ہوجانے کا امکان بھی تھا لیکن اگر سرجری نہ کی جاتی تو بچہ 20 سال کی عمر سے پہلے مر سکتا تھا۔

بعد ازاں ڈاکٹرز نے اس کی سرجری کی اور خوش قسمتی سے وہ کامیاب رہی۔ بچہ 6 دن بعد صحیح سلامت اپنے گھر لوٹ آیا۔والدہ کا کہنا تھا کہ اگر یہ پاپ کارن نہ پھنستا تو جورڈی کی اس حالت کا کبھی پتہ نہ چلتا۔ انہوں نے بتایا کہ سرجری سے قبل وہ صرف 3 گھنٹے سو پاتا تھا اور ہم سمجھتے تھے کہ اسے کم نیند آتی ہے، لیکن اب علم ہوا کہ وہ آکسیجن کی کمی سے نہیں سو پاتا تھا۔