ملک میں کورونا کے پھیلاؤ کی کیفیت پر تحقیق ،عالمی ادارہ صحت سے پاکستان کا معاہدہ طے،پاکستان کو جنوبی ایشیا میں بڑا اعزاز حاصل

اسلام آباد پاکستان کے وزارت صحت اور عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے درمیان یونٹی اسٹیڈی سے متعلق مفاہمت کی یاداشت پر دستخط ہوئے جس کے تحت پاکستان میں قومی سطح پر تحقیق کے ذریعے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی کیفیت کا ادرک کیا جائے گا۔ منعقد ہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے بتایا کہ ہیلتھ سروسز اکیڈمی اور آغا خان یونیورسٹی ہسپتال نے مشترکہ طور پر ایک پرپوزل تیار کرکے ڈبلیو ایچ او کو دیا تھا جسے منظور کرلیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ قومی سطح پر کی جانے والی اس تحقیق کے نتائج کورونا کے پھیلاؤ سے متعلق پالیسی اور پلاننگ بھی معاون ثابت ہوں گے۔ظفر مرزا نے پاکستان کے انتخاب پر ڈبلیو ایچ او سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ تحقیق کے بعد ہم عالمی سطح پر بیماری کے پھیلاؤ کی کیفیت پر بات کرسکیں گے۔انہوں نے بتایا کہ پوری دنیا سے 25 ممالک کا انتخاب کیا اور جنوبی ایشیا سے صرف پاکستان منتخب ہوا کہ جہاں قومی سطح پر مختلف علاقوں سے نمونے حاصل کیے جائیں گے۔ظفر مرزا نے بتایا کہ اگلے مہینے کے آخر میں اسٹیڈی کے نتائج سامنے آسکیں گے جس کی بنیاد پر کہہ سکیں گے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی کیفیت کیا ہے۔اس موقع پر ڈبلیو ایچ او کی کنٹری ہیڈ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا نے بتایا کہ مذکورہ تحقیق مقامی اور عالمی سطح پر غیرمعمولی اہمیت کی حامل ہے۔انہوں نے بتایا کہ ڈبلیو ایچ او عالمی اعانت اور تکنیکی امداد فراہم کررہا ہے۔بعدازاں مفاہمت کی یاداشت پر ڈبلیو ایچ او کی جانب سے پاکستان میں کنٹری ہیڈ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا اور ہیلتھ سروس اکیڈمی کے وائس چانسلر ڈاکٹر اسد حفیظ نے دستخط کیے۔ انہوں نے بتایا کہ قومی سطح پر کی جانے والی اس تحقیق کے نتائج کورونا کے پھیلاؤ سے متعلق پالیسی اور پلاننگ بھی معاون ثابت ہوں گے۔