پی ٹی آئی رکن قومی اسمبلی کنول شوذب اور پڑوسی کے جھگڑے کا ڈراپ سین

پاکستان تحریک انصاف کی رکن قومی اسمبلی کنول شوذب اور پڑوسی کے درمیان جھگڑے کا ڈراپ سین ہو گیا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ میں رہنما تحریک انصاف کنول شوذب اور پڑوسی میں صلح ہو گئی۔

کنول شوذب اور ان کے پڑوسی عبدالرحمان نے عدالت میں بیان دیا کہ ہماری صلح ہو گئی ہے، مقدمات واپس لیتے ہیں، جس پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے دونوں کے درمیان صلح قبول کر لی۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے کا اختیار سے تجاوز بادی النظر میں خلاف قانون ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ ایم این اے نے تنقید پر فوجداری مقدمہ کیسے قائم کروا دیا؟ عدالت نے کہا کہ ایف آئی اے نے الیکٹرانک کرائم قانون کا ناجائز استعمال کرکے طاقتور کو فائدہ دیا۔ جسٹس اطہر من اللہ کا کہنا تھا کہ منتخب ایم این اے نے تنقید پر پڑوسی سے جھگڑے کو کرمنل کیس بنا دیا۔

عدالت نے کہا کہ ہر کوئی دوسرے کا احتساب چاہتا ہے، خود کو طاقتور بنا کر احتساب سے بچا لیتا ہے۔