سائرن کیوں بجائے جارہے ہیں؟ سعودی حکومت نے بتادیا

ریاض : سعودی محکمہ شہری دفاع نے سائرن بجانے کو ہنگامی حالات کا پیشگی انتباہ قرار اور شہریوں خطرات سے آگاہ کرنے کا ذریعہ قرار دیا ہے۔

خلیجی ریاست سعودی عرب اپنے شہریوں کو خطرات سے محفوظ رکھنے کےلیے آئے روز موثر اقدامات اٹھاتی ہے، حال ہی میں سعودی حکومت نے ہنگامی حالات میں سائرن بجانے کا تجربہ کیا ہے۔

محکمہ شہری دفاع کا کہنا ہے کہ اس کی مدد سے موبائل پر اسیٹس ہنگامی صورتحال کی اطلاع دے گا اور ایسا کرنے پر موبائل میں وائبریشن پیدا ہوگی جس کی خاص ٹیون ہوتی ہے۔

محکمہ شہری دفاع کے مطابق ان اقدامات کا مقصد شہریوں کی جان و مال کی سلامتی اور دوسرا یہ کہ نقصانات کو کم سے کم کرنا ہے۔سعودی حکومت کی جانب سے شہریوں اور ریاست میں مقیم غیر ملکیوں کو کہا گیا ہے کہ وہ سائرن پیغامات موصول پر خوفزدہ نہ ہوں کیونکہ یہ عمل تجرباتی ہے۔