سعودی صارفین کن صورتوں میں بجلی کمپنی سے معاوضہ طلب کرسکتے ہیں؟

ریاض : سعودی ہیومن رائٹس کمیشن نے بجلی صارفین کو کمپنی سے مالی معاوضہ طلب کرنے کی صورتیں بتادیں، جس کے بعد صارفین 7 صورتوں میں معاوضے کے حقدار ہوں گے۔ سعودی ہیومن رائٹس کمیشن کی جانب سے بجلی صارفی کی سہولت کےلیے کمپنی سے معاوضہ طلب کرنے کی صورتیں بتادیں۔ہیومن رائٹس کمیشن کا کہنا ہے کہ اگر بجلی کمپنی 15 یوم(ورکنگ ڈیز) کے اندر شکایت کا ازالہ نہ کرے تو صارفین مالی معاوضے کا مطالبہ کرسکتے ہیں۔

فیس ادا کرنے کے چالیس روز کے اندر نئے ادارے کو بجلی فراہم نہ کرنے، پانچ ورکنگ ڈیز کے دوران صارف کو سروس فراہم نہ کرنے اور اندراج نہ کرنے، شہروں میں بل ادا کرنے کے تین گھنٹے اور دیہات میں پانچ گھنٹے کے بعد بجلی بحال نہ کرنے پر صارفین معاوضے کے حقدار ہوں گے۔
یہ بھی پڑھیں: سعودی عرب: توکلنا ایپ کے صارفین کیلئے بڑی خبر

ایک سال کے دوران چار بار بجلی منقطع ہونے اور ہر بار چار گھنٹے سے زیادہ تک بجلی چلی جائے تو بھی صارفین معاوضہ طلب کرسکتے ہیں۔ہیومن رائٹس کمیشن کا کہنا ہے کہ صارفین کو بجلی منقطع کرنے سے دو روز گھنٹے قبل کنکنشن کاٹنے کی اطلاع نہ دینے پر (کہ اس کا تعلق مقررہ پروگرام کے مطابق اصلاح و مرمت سے ہے) پر صارفین معاوضہ طلب کرنے کے حقدار ہوں گے۔