ووٹ فروخت کرنے کا الزام، وزیراعظم کا وزیر قانون کے پی سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ

سینیٹ الیکشن 2018 میں ووٹ فروخت کرنے کی مبینہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے خیبر پختونخوا کے وزیر قانون سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سیاسی ابلاغ شہباز گِل نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان نے خیبرپختونخوا کے وزیر قانون سے استعفی لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

شہبازگل کے مطابق وزیراعظم نے اس حوالے سے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کو احکامات دے دیے ہیں۔
شہبازگل کا کہنا ہے کہ معاملے کی انکوائری کر کے رپورٹ پیش کی جائے گی۔ 2018 کے سینیٹ انتخابات میں ارکانِ خیبرپختونخوا اسمبلی کی مبینہ خرید و فروخت کی وڈیو منظرعام پر آگئی ہے۔

وڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ارکان خیبرپختونخوا اسمبلی کے سامنے نوٹوں کے انبار لگے ہیں۔
2018 کے سینیٹ انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) ارکان کو بُلا کر نوٹوں کے انبار لگا کر خریدا گیا۔ سینیٹ الیکشن 2018: کے پی اسمبلی کے ارکان کی مبینہ خرید و فروخت کی وڈیو سامنے آگئی

2018 کی اس وڈیو میں موجودہ وزیرقانون خیبرپختونخوا سلطان محمود خان بھی موجود ہیں، وڈیو میں ایم پی اے عیبد مایار بھی اپنا حصہ لیتے نظر آرہے ہیں۔ پیپلزپارٹی کے سابق ایم پی اے محمد علی باچا رقم پی ٹی آئی ارکان کو دیتےنظرآرہے ہیں، وڈیو میں سلطان محمود رقم وصول کرکے بیگ میں رکھ لیتے ہیں، پی ٹی آئی کے سردار ادریس بھی وڈیو میں موجود ہیں اور رقم وصول کرتےنظر آرہے ہیں۔