’شاہ لطیف سے گرفتار دہشتگردوں کا ہدف سندھ اسمبلی تھا‘

کراچی: صوبائی وزیر اطلاعات ناصر شاہ نے انکشاف کیا ہےکہ شاہ لطیف ٹاؤن سے گرفتار کیے گئے دہشتگردوں کا ہدف سندھ اسمبلی تھا۔ ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ سندھ اسمبلی کے گیٹ پر رکشے سے ایک دہشتگرد نے خود کش دھماکا کرنا تھا لیکن اسمبلی کا سیشن نہ ہونےکی وجہ سےحملہ نہیں کیا جاسکا۔

یہ بھی پڑھیں پی ڈی ایم آج حیدرآباد میں عوامی طاقت کا مظاہرہ کرے گی

انہوں نے مزید بتایا کہ دہشتگردوں کے موبائل فون سے سندھ اسمبلی کی ویڈیو ملی ہے، دہشت گردوں کا افغانستان کے صوبے قندھار سے براہ راست رابطہ تھا اور گرفتار 3 دہشتگردوں کا تعلق قندھار جب کہ ایک کا ننگرہار سے ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز کراچی کے علاقے شاہ لطیف ٹاؤن میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کے دہشت گردوں کے ساتھ مقابلے میں ایک ملزم ہلاک اور 5 کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔انچارج سی ٹی ڈی راجا عمر خطاب نے بتایا کہ شاہ لطیف ٹاؤن میں ایک عمارت میں دہشتگرد موجود تھے، خفیہ اطلاع پر دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کی گئی۔