حکومت نے باجوڑ میں خواتین پر پابندیوں سے متعلق جرگے کے فیصلے کا نوٹس لے لیا

باجوڑ میں خواتین پر پابندیوں سے متعلق جرگے کے فیصلے کا نوٹس لیتے ہوئے خیبرپختونخوا حکومت نے متعلقہ ضلعی انتظامیہ کو ہدایت کی کہ جرگہ سے مذاکرات کے ذریعے فیصلہ واپس لیا جائے، بصورت دیگر جرگہ کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں K2 کی مہم جوئی، لاپتہ علی سدپارہ اور ٹیم کی تلاش کیلیے آج پھر سرچ آپریشن

ترجمان خیبر پختونخوا حکومت کامران بنگش نے میڈیا کو جاری ویڈیو بیان میں کہا کہ باجوڑ میں جرگے نے خلاف آئین و قانون فیصلے کیے۔ انہوں نے کہا کہ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر باجوڑ کو جرگہ ممبران سے مذاکرات کرکے آئین وقانون سے آگاہ کرنے اور فیصلہ واپس لینے کی ہدایت کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئین میں ایسے فیصلوں کی کوئی کنجائش نہیں۔ 25 ویں آئینی ترمیم کے بعد ضم اضلاع میں ایسے فیصلوں کا اختیار کسی کو نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مذاکرات کے بعد بھی اگر جرگہ ممبران فیصلے واپس نہیں لیتے تو پھر قانون کے مطابق کارروائی ہوگی اور کسی کو آئین سے ہٹ کر فیصلے کرنے کا اختیار نہیں دے سکتے۔