‘یہ درست نہیں کہ نیب پلی بارگین کی منظوری دیتا ہے’

قومی احتساب بیورو (نیب) کا کہنا ہے یہ درست نہیں کہ نیب پلی بارگین کی منظوری دیتا ہے۔

نیب کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ملزم پلی بار گین کی درخواست میں اپنےجرم کا اعتراف کرتا ہے، لوٹی گئی واجب الادا رقم ادا کرتا ہے اور 10سال کے لیے الیکشن لڑنے کے لیے نااہل ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں حلیم عادل شیخ کا سندھ حکومت پر انتقامی کارروائی کا الزام

اور 487 ارب روپے قومی خزانے میں جمع کروائے۔