سانحہ مچھ: کراچی میں دھرنے، ٹریفک درہم برہم، پروازیں آج بھی متاثر

کراچی: سانحہ مچھ کے ورثا سے اظہار یکجہتی کے لیے شہر کے مختلف مقامات پر دھرنے جاری ہیں۔ ٹریفک پولیس کے مطابق شہر کے 21 مقامات پر دھرنے اور احتجاج جاری ہے جہاں فائیو اسٹار چورنگی، نارتھ ناظم آباد، فیڈرل بی ایریا اور شاہراہ پاکستان پر عائشہ منزل کے قریب بھی احتجاج جاری ہے جس کی وجہ سے ٹریفک معطل کردی گئی ہے۔

اس کے علاوہ نیو رضویہ، صفورا چورنگی، جوہر موڑ، جوہر چورنگی، اسٹیل ٹاؤن چورنگی، سرجانی، خدا کی بستی، کے ڈی اے، نمائش،کامران چورنگی، پاور ہاؤس چورنگی اور عباس ٹاؤن پر بھی احتجاج اور دھرنے جاری ہیں۔ شہر میں ائیر پورٹ، ناتھا خان، ملیر 15، نیشنل ہائی وے، سفاری پارک یونیورسٹی روڈ،کورنگی ڈھائی نمبر، مغربی بائی پاس، ابوالحسن اصفہانی روڈ، سفاری پارک، ناظم آباد ایک نمبر چورنگی، شاہ فیصل کالونی، نیشنل ہائی وے اور ملیر 15 کے مقامات پر بھی احتجاج جاری ہے۔ ابراہیم حیدری، نیپا چورنگی، نارتھ کراچی، گلبرگ، انچولی، عزیز آباد، آئی آر سی امام بارگاہ اور بورڈ آفس پر بھی احتجاج جاری ہے۔

شہر کےمختلف علاقوں میں احتجاج کی وجہ سے کئی مقامات پر ٹریفک کی روانی معطل ہے اور ٹریفک کو متبادل روٹ سے راستہ فراہم کیا جارہا ہے جس کے باعث شہر میں ٹریفک کا نظام درہم برہم ہے۔ گزشتہ روز بھی شدید ٹریفک جام کی وجہ سے کئی شہری دفاتر نہیں پہنچ سکے اور ائیرپورٹ پہنچنے والوں کو بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جس کے سبب کئی پروازیں تاخیر کا شکار ہوئیں۔ دوسری جانب ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہےکہ شہر میں سڑکوں کی بندش اور رکاوٹوں کی وجہ سے ائیرپورٹ کے راستوں پر شدید ٹریفک جام کے باعث مسافروں اور عملے کو پہنچنے میں دشواری ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ کراچی سے روانہ ہونے والی متعدد پروازیں منسوخ یا تاخیر کا شکار ہیں، شہر سے پروازوں کی منسوخی یا تاخیر کے باعث اندرون ملک دوسری پروازیں بھی متاثر ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ تمام مسافربروقت معلومات کے لیے فلائٹ انکوائری یا پی آئی اے کال سینٹر سے رابطے کریں۔