قومی ٹیم کو ٹیسٹ سیریز میں شکست کیوں ہوئی؟

کرائسٹ چرچ: قومی کرکٹ ٹیم کے قائم مقام کپتان محمد رضوان نے شکست کی وجوہات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ میں کپتان کی حیثیت سے تمام ذمہ داری قبول کرتا ہوں۔ اپنے تازہ بیان میں محمد رضوان کا کہنا تھا کہ مجھے جس طرح وکٹ کیپنگ میں پرفارم کرنا چاہیے تھا ویسا نہیں کرسکا، ہم نےمیچ میں اچھی فیلڈنگ نہیں کی، ٹیسٹ میچ جیتنے کے لیے وکٹیں درکارہوتی ہیں، فیلڈنگ بہت اہم ہوتی ہے، ہم نے تینوں شعبوں میں اچھا کھیل پیش نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ سیریز ہمارے لیے بہت بڑا سبق تھا، بہتری کی ضرورت ہے، ہمیں فیلڈنگ میں سب سےزیادہ بہتری لانےکی ضرورت ہے، بیٹنگ میں بھی ہماری پرفارمنس مستقل نہیں ہے۔محمدرضوان کا اپنے بیان میں کہنا تھا کہ ہمارے بیٹسمین باصلاحیت ہیں، آئندہ سیریز میں بہترکارکردگی کی امید ہے، اس ٹیسٹ میچ میں باؤلرز نے ہمارے لیے کئی مواقع پیدا کیے، ان کے جارحانہ انداز میں کمی نہیں ہے مگر کیچز چھوٹنے سے مورال گرا، ہم میچ کےاختتام میں ریلیکس ہوئےجس کاخمیازہ بھگتا۔

خیال رہے کہ نیوزی لینڈ نے دوسرے ٹیسٹ میں بھی پاکستان کو شکست دے دی، قومی ٹیم دوسری اننگز میں 186رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی، حریف نے اننگز اور 176 رنز سے میچ جیت لیا۔