حالات کو کنٹرول اور حکومت کو اپنی پالیسیاں دیکھنا ہوں گی،محسن شیخانی

سی ڈی اے اپنے پلان باہر کی کمپنیوں کو دے ، ان سے کام کرائے ، ہمین چاہئے کہ پرائیویٹ فرم کی خدمات حاصل کریں ۔ سچی بات میں گفتگو

اسلام آباد (روزنیوز رپورٹ)چیئرمین پاکستان آباد محسن شیخانی نے روزنیوز کے پروگرام ’’ سچی بات ‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ زمینوں کی ڈیجلائیزیشن ہو سکتی ہے یہ کام کسی پرائیویٹ کمیٹی دیا جائے ، ہ میں ضرورت ہے کہ کام کرانے کی پروائیویٹ سیکٹر سے ڈیجٹلائزیشن کرنا ہے ، ہم نے سافٹ ویئر سمیت اور چیزیں تیار کرنی ہیں ، یہ ساری چیزیں کلیئر کرنا ہو گی ، ہر بڑے سیکٹر کا ماسٹر پلان ہونا چاہئے ، سی ڈی اے اپنے پلان باہر کی کمپنیوں کو دے ، ان سے کام کرائے ، ہمین چاہئے کہ پرائیویٹ فرم ہائر کریں تاکہ منصوبے پر عمل ہوں ، یہ ملک کے لئے بہت اہم ہے ، حکومت کو ڈھائی سال ہوئے ، ہ میں تو سات آٹھ ماہ ہوئے ہیں ، ایک مائنڈ سیٹ ہے کہ کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ ان کی جاگیر ہے وہ کسی کو دینا ہی نہیں چاہے ، وزیر اعظم کو کہا کہ کم خرچ والی ہاءو سنگ پراجیکٹ دینا چاہئے تو ہ میں کچھ تبدیلیاں کرنا ہونگی ،ابھی 80فیصد کام ہونا باقی ہے ، ہ میں چیزیں ہاتھ سے ڈیزائن کرنا ہونگی ، لوکل انڈسٹری متاثر نہ ہو، امپورٹ پر توجہ دینا ہو گی ، سیمیٹ 400روپے میں ایکسپورٹ ہو رہی ہے ، ہم 500ارو 600کا دے رہے ہیں ، لانگ ٹریم پالیسی ڈیزائن کرنا ہو گی ۔ حالات کو کنٹرول اور درست کرنا ہو گا، حکومت کو اپنی پالیسیاں دیکھنا ہوں گی ، پالیسیاں بنانا ہو گی ۔

محشن شیخانی