سعودی ہیلتھ انشورنس کونسل کی جانب سے انشورنس پالیسی میں تبدیلی

ریاض : سعودی ہیلتھ انشورنس کونسل نے انشورنس قانون میں ترمیم کرکے ٹریفک حادثات میں زخمی ہونے والے افراد کا علاج انشورنس کمپنیوں کے ذمہ لگادیا۔ سعودی ہیلتھ انشورنس کونسل کی جانب سے سرکاری اسپتالوں اور انشورنس کمپنیوں کے درمیان معاملات طے کرنے کےلیے انشورنس پالیسی میں تبدیلی کی گئی ہے تاکہ ٹریفک حادثات کے زخمیوں کا علاج انشورنس کمپنیوں کے سپرد ہو۔

اس مقصد کےلیے سعودی حکام نے انشورنس قانون کی دفعہ 11 میں ترمیم کی ہے، اس حوالے سے ہیلتھ کونسل کے ترجمان عثمان القصبی نے بتایا کہ دفعہ گیارہ پہلے سے موجود تھی تاہم اس پر عمل درآمد نہیں ہورہا تھا لیکن اب اس پر عمل درآمد ہوگا اور ٹریفک حادثات کے زخمیوں کا علاج سرکاری اسپتالوں میں مفت نہیں ہوگا بلکہ اسپتال علاج کی رقم انشورنس کمپنیوں سے وصول کرے گا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ جن شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کا میڈیکل انشورنس ہے اور وہ ٹریفک حادثے میں زخمی ہوکر سرکاری اسپتالوں میں علاج کے لیے لائے جاتے ہیں تو ان کے اخراجات انشورنس کمپنی کو ادا کرنا ہوں گے۔