مسجد نبوی کی انتظامیہ نے نمازیوں کو اپنے ہمراہ بچے لانے سے روک دیا

مسجد نبوی میں آنے والے تمام نمازیوں پر ایک اہم پابندی لگا دی گئی ہے۔ مسجد نبوی کی انتظامیہ نے نمازیوں کو تاکید کی ہے کہ وہ اپنے ہمراہ بچوں کو نہ لائیں۔ مسجد نبوی کے ترجمان ’جمعان العسیری‘ نے کہا ہے کہ مسجد نبوی میں آنے والے زائرین اور نمازی چھوٹے بچوں کو اپنے ہمراہ نہ لائیں۔ اس پابندی کا مقصد کورونا سے متعلق احتیاطی تدابیر پر عمل کرانا ہے۔

العسری نے مزید کہا کہ موسم سرما کی تعطیلات کے دوران ہزاروں زائرین دیگر شہروں سے مسجد نبوی آ رہے ہیں، ان کی زیارت اور عبادت کی خاطر بہترین انتظامات کیے گئے ہیں۔ تاہم انہیں روضہ اطہر پر حاضری دینے کے لیے ضوابط پر عمل کرتے ہوئے اعتمرنا ایپ سے پیشگی رجسٹریشن کروانی ہو گی۔تاکہ انہیں موقع پر اندر آنے سے روکا نہ جائے۔ زائرین کو چاہیے کہ وہ بچوں کی صحت کے تحفظ کی خاطر انہیں مسجد میں نہ لائیں۔

سماجی فاصلے اور ماسک کا استعمال لازمی کریں۔ اس مقصد کے لیے فرش پر سماجی فاصلے کی نشاندہی کرنے والے نشانات لگا دیئے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ اہلِ اسلام کو مسجد نبوی کے حوالے سے شاندار خبر سُنا دی گئی ہے۔مسجد نبوی کی چھت کو کئی ماہ بعد گزشتہ روز تین نمازوں کے لیے کھول دیا گیا ہے،جسے کورونا وبا کے دوران کئی ماہ بند رکھا گیا تھا۔ مسجد نبوی کی چھت کو نمازیوں کی تعداد کے پیش نظر کھول دیا گیا ہے۔

انتظامیہ کے مطابق مسجد نبویﷺ آنے والے نمازی کورونا کی احتیاطی تدابیر اور سماجی فاصلے کا خیال رکھیں۔مسجد نبوی کے انتظامی امور دیکھنے والی جنرل پریذیڈنسی کی جانب سے مسجد نبوی کو تین نمازوں کے لیے کھولنے کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ جنرل پریذیڈنسی کے مطابق مسجد نبوی کی چھت پر فجر، مغرب اور عشاء کی نمازیں ادا کی جا سکیں گی۔ انتظامیہ کے ٹویٹر اکاؤنٹ پر بتایا گیا ہے کہ مسجد میں نماز پڑھنے والے تمام افراد کو کورونا سے متعلق احتیاطی تدابیر پر مکمل طور پر عمل کرنا ہو گا۔