friend daughter sucking sideways big rod.videos porno
desi porn
pornoxxx

سندھ کا Wacog بل کیخلاف مقدمے میں فریق بننے کا فیصلہ

اسلام آباد: ایل این جی کی قیمت کے تعین پر وفاقی حکومت کو دھچکے کا سامنا ہوگا کیوں کہ حکومت سندھ نے گیس کی اوسط قیمت کے بل ( Wacog ) کے خلاف فریق بننے کا فیصلہ کرلیا ہے جب کہ اس بل کو ایک نجی پارٹی نے سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

پارلیمان کے دونوں ایوانوں نے درآمداتی ایل این جی کی قیمت کو مسابقتی بنانے کے لیے مقامی اور درآمدشدہ گیس کی قیمتوں کے ادغام سے مناسب قیمت وضع کرنے کے لیے weighted average cost of gas ( Wacog ) بل منظور کیا تھا۔ فی الوقت کمرشل، صنعتی اور پہاور سیکٹر کے صارفین پر Wacog لاگو نہیں ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے سردیوں میں ایل این جی کو گھریلو صارفین کی جانب منتقل کردیا تھا جس کی وجہ سے گیس سیکٹر میں گردش قرض نمایاں طور پر بڑھ گیا۔

ایل این جی کی منتقلی کے بعد کوئی قانونی فریم ورک موجود نہ ہونے کی وجہ سے ایس این جی پی ایل بل وصول نہ کرسکی چنانچہ اس نے پاکستان اسٹیٹ آئل کو ادائیگی نہیں کی۔ مقامی صارفین پر ایس این جی پی ایل کے ایک کھرب روپے واجب الادا ہیں۔ اس کے نتیجے میں ایس این جی پی ایل پی ایس او کا سب سے بڑا ناہندہ بن گیا جس پر268 ارب روپے واجب الادا ہیں۔

سندھ کے وزیرتوانائی امتیازاحمد شیخ نے ایکسپریس ٹریبیون سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت نے صوبوں بشمول سندھ، اعتماد میں لیے بغیر راتوں رات Wacog بل منظورکروالیا۔ انھوں نے کہا کہ ہم اس مقدمے میں فریق بنیں گے اور آئندہ سماعت پر Wacog بل کی مخالفت کریں گے۔

spanish flamenca dancer rides black cock.sex aunty
https://www.motphim.cc/
prmovies teen dildo wet blonde stunner does it on the hood of car.