ڈاکٹر شیریں مزاری کا خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پیغام

وزارت انسانی حقوق کام کی جگہوں پر صنفی امتیاز ، خواتین کی حراسگی اور ہر سطح پر خواتین کے خلاف تشدد کے خاتمے کو یقینی بنانے کے لئے سرگرم عمل ہے۔ 8 مارچ کوخواتین کے عالمی دن کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں وفاقی وزیر انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا کہ سال 2020ءصنفی مساوات اور تمام خواتین اور لڑکیوں کے انسانی حقوق کے لئے متحرک کردار ادا کرنے کے لئے اقدامات اٹھانے کا ایک ناقابل فراموش موقع فراہم کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت انسانی حقوق پاکستان میں خواتین کے وقار کے حوالے سے قوانین اور قواعد و ضوابط کا جائزہ لیتے ہوئے انہیں مزید مستحکم اور موثر بنانے کا عزم رکھتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سال 2020 دنیا بھر میں خواتین کو بااختیار بنانے اور صنفی مساوات کے لئے عالمی تحریک میں کئی اہم سنگ میل کی نشاندہی کرتا ہے۔ اس موقع پر سیکرٹری برائے انسانی حقوق رابعہ جویریہ آغا نے کہا کہ ”ماضی میںغیر مساوی حقوق نے مردوں اور عورتوں کے مابین طاقت کے عدم توازن کو بڑھاوا دیاجو خواتین کے خلاف امتیازی رویوں کا باعث بنا“۔ حکومت صنفی فرق کو کم کرنے ، خواتین کو بااختیار بنانے اور صنفی مساوات کو فروغ دینے کے لئے پرعزم ہے، جو پائیدار ترقی کو تیز کرنے کے لئے بہت ضروری ہے۔ وفاقی سیکرٹری نے مزید کہا کہ حکومت پائیدار ترقیاتی مقصد 5 پر بھی خصوصی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہےتاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ پاکستان میں خواتین اور لڑکیوں کے ساتھ امتیازی سلوک کا خاتمہ ہو