شہریوں کو راشن کیسے بھجوایا جائے؟ سندھ حکومت کا مختلف تجاویر پر غور

کراچی: سندھ میں کرونا وائرس کا شکار افراد کے گھروں پر راشن پہنچانے کے فیصلے کے پیش نظر سندھ حکومت نے حکمت عملی ترتیب دینے کے لیے سر جوڑ لیے۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے پیش نظر سندھ حکومت فوڈ سیکیورٹی پلان پر غور و فکر کر رہی ہے، شہریوں کو راشن بھجوانے کے لیے مختلف تجاویر پر غور کیا جارہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نے ایک فلاحی ادارے سے رابطہ کر کے دریافت کیا ہے کہ وہ کیسے اور کتنے میں لوگوں کو کھانا فراہم کرتے ہیں۔ فلاحی ادارے کی جانب سے جواب دیا گیا کہ ہم آپ کو پورا پلان ترتیب کر کے بھجوادیں گے۔

سندھ حکومت اس بات پر بھی غور کر رہی ہے کہ 15 روز کے لیے صنعتوں کی عارضی بندش کے بعد مزدوروں کو ایڈوانس تنخواہ کیسے دی جائے، اس سلسلے میں سندھ حکومت نے صنعت کاروں سے بھی رابطہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ امکانی طور پر سندھ حکومت نے اس مد میں خرچ ہونے والی رقم کا اندازہ 6 ارب لگایا ہے، کرونا وائرس پر ٹاسک فورس کے جلد ہونے والے اجلاس میں بھی اہم فیصلے متوقع ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سکھر میں آئیسولیشن سینٹر میں موجود تمام افراد کے گھروں میں راشن پہنچانے کی ہدایت کی تھی۔

وزیر اعلیٰ نے کہا تھا کہ میں جانتا ہوں آپ کمانے والے لوگ آئیسولیشن میں ہیں، آپ کو گھر کی روٹی روزی کی فکر ہے، آپ یہ فکر چھوڑ کر اپنی صحت پر توجہ دیں۔