شاہد خاقان اپنے دور میں سلیمان شہباز کو مراعات دیتے رہے: شہزاد اکبر

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب بیرسٹر شہزاد اکبر نے الزام عائد کیا ہے کہ شہباز شریف کے صاحبزادے سلیمان شہباز شوگر انڈسٹری کے لیے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے مراعات حاصل کرتے رہے۔

نجی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے شہزاد اکبر نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی پر الزام لگایا کہ وہ اپنے دور حکومت میں سلیمان شہباز کو شوگر انڈسٹری کے لیے مراعات دیتے رہے۔

اس الزام کی تردید کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ یہ بات درست نہیں ہے، ان کی سلیمان شہباز سے چند ملاقاتیں ہوئی تھیں لیکن اس وقت وہ وزیر بھی نہیں تھے۔

شا ہد خاقان عباسی نے مؤقف اختیار کیا کہ فیصلے وزیراعظم نہیں بلکہ ای سی سی اور کابینہ کرتی ہے۔اس پر شہزاد اکبر نے کہا کہ ایک طرف شاہد خاقان عباسی وزیراعظم عمران خان کے فیصلوں پر جواب طلبی چاہتے ہیں تو دوسری طرف اگر ان کے دور میں شوگر ملز کو سبسڈی دینے کی بات کی جائے تو وہ فیصلوں کا ذمہ دار کابینہ اور ای سی سی کو ٹھہراتے ہیں۔

اس حوالے سے شاہد خاقان عباسی نے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر سے لا علمی کا اظہار کیا اور کہا کہ وہ کسی بھی ایسے شخص سے بات نہیں کر سکتے جو اسمبلی میں آ کر بات نہیں کر سکتا۔