سپریم کورٹ نےمارگلہ ہلز کے تحفظ سے متعلق کیس میں مونال ریسٹورنٹ کا توسیعی حصہ گرانے کا حکم دے دیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ نےمارگلہ ہلز کے تحفظ سے متعلق کیس میں مونال ریسٹورنٹ کا توسیعی حصہ گرانے کا حکم دے دیا،نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ میں مارگلہ ہلز کے تحفظ سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیئرمین سی ڈی اے نے کہاکہ مونال ریسٹورنٹ کی توسیع غیرقانونی ہے،غیرقانونی توسیع اور درخت کاٹنے پر مونال کو سیل کر دیا ۔چیف جسٹس نے کہاکہ مارگلہ ہلز پر دی گئی تمام لیز کا دوبارہ جائزہ لیں، چیئرمین سی ڈی اے نے کہاکہ مارگلہ ہلز کا بڑا حصہ پنجاب اور کے پی میں بھی آتا ہے،چیف جسٹس نے کہاکہ مارگلہ ہلز پر

ہر قسم کی غیرقانونی تعمیرات بند ہونگی۔سپریم کورٹ نے مونال ریسٹورنٹ کا توسیعی حصہ گرانے کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ مونال ریسٹورنٹ کی جانب درخت بھی کاٹے گئے، سی ڈی اے فوری طور پر نئے درخت لگانا یقینی بنائے، مارگلہ ہلز کا تحفظ ہر صورت یقینی بنانا ہے۔سپریم کورٹ میں مارگلہ ہلز کے تحفظ سے متعلق کیس کی سماعت عید کے بعد تک ملتوی کردی۔